عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں 23 فیصد تک کمی ہوگئی ہے ۔تفصیلات کے مطابق عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں واضح کمی دیکھنے کو ملی ہے۔ خام تیل کی قیمتیں 23فیصد تک کم ہوگئی ہیں جس کے بعد امید ظاہر کی جارہی ہے کہ پاکستان میں بھی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی آئےگی۔
اس حوالے سے ماہرین کا کہنا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کے بعد حکومت کو بھی چاہیے کہ پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو فوری طور پر کم کیا جائے تاکہ عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف ملے۔
اس طرح اگر حساب لگایا جائے تو پاکستان میں پیٹرول 27 روپے فی لیٹر تک سستا ہوسکتا ہے۔ واضح رہے کہ حکومت نے فروری کے ماہ ميں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا تھا انہوں نے ڈیزل کی قیمت میں اضافے اور پیٹرول کی قیمت میں معمولی کمی کی تجویز دی تھی جسے مسترد کردیا گیا۔
وفاقی حکومت نے فروری کے ماہ میں تمام پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں موجودہ سطح پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا تھا ۔يوں رواں ماہ پٹرول کی قیمت 116 روپے ساٹھ پیسے فی لیٹر ، ہائی اسپیڈ ڈیزل 127روپے چھبیس پیسے فی لیٹر، لائٹ ڈيزل 88 روپے 55 پيسے، جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت 99 روپے پینتالیس پیسے فی لیٹر کی سطح پر برقرار ہے گی۔
عالمی سطح پر خام پٹرول کی قیمتوں میں 23فیصد تک کمی ہوگئی ہے اگر اس حساب سے پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اندازہ لگایا جائے تو پاکستان میں 27 روپے فی لیٹر سستا ہوسکتا ہے جس سے عوام کو ایک بڑا ریلیف مل سکتا ہے۔
اب حکومت کو چاہيےکہ پٹرول کی مصنوعات ميں فوری کمی کا اعلان کرے تاکہ عوام کو کچھ سکون نصيب ہو۔اور عوام کو ريليف مل سکے۔کيونکہ عوام پہلے ہی مہنگائی کی ستائی ہوئی ہے۔ اور حکومت سے شکوے کرتی رہتی ہے۔