وزیراعظم عمران خان نے دورہ ملیشیا کے لیے بھارتی فضائی حدود استعمال نہ کرنے کا فیصلہ کيا۔ وزیراعظم نے بھارت سے فضائی حدود استعمال کرنے کی کوئی درخواست بھی نہیں کی۔
وزیراعظم اپنے چھوٹے طیارے پر براہ راست چین ملائشیا گئے ۔جس سے وزیراعظم کا فضائی سفر عام سفر سے چار سے پانچ گھنٹے زیادہ ہو گيا تھا۔
ا میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان اور بھارت کے مابین جاری کشیدگی کے باعث وزیراعظم عمران خان دورہ ملائیشیا کے لیے بھارتی فضائی حدود استعمال نہیں کی۔ عمران خان چھوٹے طیارے پر براہ راست چین سے ملیشیا پہنچے۔ جس کے باعث وزیراعظم کا فضائی سفر عام سفر سے چار سے پانچ گھنٹے زیادہ ہو ا۔
حکومت پاکستان نے بھارت سے فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست بھی نہیں کی ۔
واضح رہے وزیراعظم عمران خان تین فروری کو دو روزہ دورے پر ملیشیا روانہ ہوئے تھے۔ وزیراعظم کو دورے کی دعوت ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے دی ۔کابینہ ارکان اور اعلی سطح کا وقت بھی وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ تھا۔
وزیراعظم عمران خان کی ملائیشین ہم منصب سے وفود کی سطح پر ملاقات ہوئی۔دورے کے دوران مختلف معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کیے گئے۔ وزیراعظم عمران خان ملیشیا کے تھنک ٹینک کے اجلاس سے خطاب بھی کيا۔

وزیراعظم کا دورہ دوطرفہ اسٹریٹجک شراکت داری کو مزید مستحکم کيا۔۔

وزیراعظم عمران خان نے دورہ ملیشیا کے لیے بھارتی فضائی حدود استعمال نہ کرنے کا فیصلہ کيا۔ وزیراعظم نے بھارت سے فضائی حدود استعمال کرنے کی کوئی درخواست بھی نہیں کی۔
وزیراعظم اپنے چھوٹے طیارے پر براہ راست چین ملائشیا گئے ۔جس سے وزیراعظم کا فضائی سفر عام سفر سے چار سے پانچ گھنٹے زیادہ ہو گيا تھا۔
ا میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان اور بھارت کے مابین جاری کشیدگی کے باعث وزیراعظم عمران خان دورہ ملائیشیا کے لیے بھارتی فضائی حدود استعمال نہیں کی۔ عمران خان چھوٹے طیارے پر براہ راست چین سے ملیشیا پہنچے۔ جس کے باعث وزیراعظم کا فضائی سفر عام سفر سے چار سے پانچ گھنٹے زیادہ ہو ا۔
حکومت پاکستان نے بھارت سے فضائی حدود استعمال کرنے کی درخواست بھی نہیں کی ۔
واضح رہے وزیراعظم عمران خان تین فروری کو دو روزہ دورے پر ملیشیا روانہ ہوئے تھے۔ وزیراعظم کو دورے کی دعوت ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے دی ۔کابینہ ارکان اور اعلی سطح کا وقت بھی وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ تھا۔
وزیراعظم عمران خان کی ملائیشین ہم منصب سے وفود کی سطح پر ملاقات ہوئی۔دورے کے دوران مختلف معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کیے گئے۔ وزیراعظم عمران خان ملیشیا کے تھنک ٹینک کے اجلاس سے خطاب بھی کيا۔
وزیراعظم کا دورہ دوطرفہ اسٹریٹجک شراکت داری کو مزید مستحکم کيا۔