و ز یر ا عظم پاکستا ن عمران خان نے بلوچستان کو اس کا حق ادا کردیا ۔بلوچ عوام عمران خان کے شکرگزار ۔حکومت نے سوئی گیس کی آمدنی کا چالیس فیصد بلوچستان دینے کا فیصلہ کرلیا ۔تا کہ بلوچستان کی محرومیوں کو کم کیا جا سکے۔ ایک اہم پیش رفت سامنے آئی وفاقی حکومت نے سوئی گیس فیلڈ سے حاصل ہونے والی آمدنی کا 40 فیصد حصہ بلوچستان کے ساتھ بانٹنے پر اتفاق کر لیا ہے ۔حکومت بلوچستان جلد ہی اس سلسلے میں پاکستان پٹرولیم لمیٹڈ پی پی ایل کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کرے گی۔ اس باہمی مفاہمت کے نتیجے میں صوبے کو سالانہ چھ ارب روپے تک کی رقم ملے گی۔ جو کہ گیس کی مجموعی آمدنی کا 40 فیصد حصہ بنتا ہے۔ پاور ڈویژن کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ پی پی ایل بھی بلوچستان کو 20 ارب روپے ادا کرے گی ۔معاہدے کے مطابق بلوچستان کی پی پی ایل کی جانب سے ادا کئیے جانے والے 20 ارب کی بقایا جات کی مد میں ادا کیے جائیں گے ۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ 26 اپریل کو حکومت نے قومی مالیاتی کمیشن یعنی این ایف سی ایوارڈ اور ا ٹھا ر و یں تر میم پر نظر ثا نی کر نے کا فیصلہ کیا ہے ۔ذرائع کا کہنا ہے ، کہ متعد د سیاسی جماعتو ں نے حما یت کی۔ ا و ر ا ٹھا ر و یں تر میم میں تبد یلی کے لئے و فا قی حکو مت کو ا پنے تعا و ن کی یقین د ہا نی بھی کرا ئی ہے ۔ ایک اہم پیش رفت سامنے آئی وفاقی حکومت نے سوئی گیس فیلڈ سے حاصل ہونے والی آمدنی کا 40 فیصد حصہ بلوچستان کے ساتھ بانٹنے پر اتفاق کر لیا ہے ۔حکومت بلوچستان جلد ہی اس سلسلے میں پاکستان پٹرولیم لمیٹڈ پی پی ایل کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کرے گی۔ اس باہمی مفاہمت کے نتیجے میں صوبے کو سالانہ چھ ارب روپے تک کی رقم ملے گی۔ جو کہ گیس کی مجموعی آمدنی کا 40 فیصد حصہ بنتا ہے۔ پاور ڈویژن کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ پی پی ایل بھی بلوچستان کو 20 ارب روپے ادا کرے گی ۔معاہدے کے مطابق بلوچستان کی پی پی ایل کی جانب سے ادا کئیے جانے والے 20 ارب کی بقایا جات کی مد میں ادا کیے جائیں گے ۔